Hadees in urdu with text from imam bukhari book | islamic Information in urdu

 اس ٖصفحے پر آپ کو Islamic wallpapers ملیں گے جو ہم نے امام بخاری رحمۃ اللہ علیہ کی کتاب الادب المفرد سے بنائیں ہیں، یہ تقریبا سب ہی Hadees ہیں، ہم نے آپ کی سہولت کیلئے Hadees ka urdu text بھی لکھ دیا ہے تاکہ اسے کاپی بھی کر سکیں،ہم اس میں مزید اضافے بھی کرتے رہیں گے،اس لیے آپ اسے دوبارہ بھی وزٹ کرتے رہیے گا۔ 

Free me Sawab Hadees in urdu 

حدیث شریف:

جب کوئی آدمی  بیمار ہوتا ہے تو اس کیلئے وہ والی نیکیاں  بھی لکھی جاتی رہتی ہیں جو وہ صحت کے زمانے میں کرتا تھا(اگرچہ  اب  بیماری کی وجہ سے وہ ا نہیں نہیں کرپارہا ہوتا)۔

مَا مِنْ أَحَدٍ يَمْرَضُ، إِلَّا كُتِبَ لَهُ مِثْلُ مَا كَانَ يَعْمَلُ وَهُوَ صَحِيح

(یہ حدیث امام بخاری کی کتاب الادب المفردسے لی گئی ہے)



Ghair Muslim ki ayadat 

حدیث شریف:

ایک یہودی بچہ رسول اللہ ﷺ کا خادم تھا جب وہ بیمار ہواتو رسول اللہ ﷺ اس کی عیادت کرنے آئے تھے۔


 أَنَّ غُلَامًا مِنَ الْيَهُودِ كَانَ يَخْدُمُ النَّبِيَّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَمَرِضَ، فَأَتَاهُ النَّبِيُّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَعُودُهُ

(یہ حدیث امام بخاری کی کتاب الادب المفردسے لی گئی ہے)

وضاحت:

غیر مسلموں کی عیادت بھی کرنی چاہیے، ان  کی فوتگی پر تعزیت بھی کرنی چاہیے صرف ان کی وفات پر بخشش کی دعا نہیں کی جاسکتی ۔



Hadees about Kabira Gunah 

حدیث شریف:

بڑے کبیرہ گناہ تین ہیں

اللہ کے ساتھ شرک کرنا 

ماں باپ کی نافرمانی کرنا 

جھوٹ بولنا 

یہ حدیث امام بخاری کی کتاب الادب المفرد سے لی گئی ہے



Hadees about conveyance in urdu 

حدیث شریف:

حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں میں ہر معاملہ میں اللہ سے دعا کرتا ہوں حتی کہ یہ دعا بھی کرتا ہوں کہ میری سواری تیز چلنے لگے ۔(الادب المفرد)

 

وضاحت:

  یعنی جب سوار سست ہو جاتی تھی تو اللہ سے دعا کرتے تھےکہ  یا اللہ اس کی تھکن دور فرما اور اسے تیز چلا ۔



Hadees about conveyance - car and bike  in urdu


Quote about neighbours in urdu by imam Hassan 

حضرت امام حسن سے پوچھا گیا پڑوسی کون ہوتا ہے، آپ رضی اللہ عنہ نے فرمایا، چالیس گھر آگے، چالیس گھر پیچھے، چالیس گھر دائیں طرف اور چالیس گھر بائیں طرف۔

(الادب المفرد، امام بخاری)


Quote about neighbours in urdu by imam hassan

Hadees about Dawat and Gift in urdu 

حدیث شریف:
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا:
دعوت دینے والی کی دعوت قبول کرو، کسی کا تحفہ واپس نہ کرو اور مسلمانوں کو مت مارو۔ 
(الادب المفرد، امام بخاری)
وضاحت:
  • عام حالات میں دعوت قبول کرنا ضروری ہے لیکن اگر کسی ایسی چیز کی دعوت دی جائے جو اللہ کی نافرمانی پر مبنی ہو تو اس کو رد کرنا بھی فرض ہے۔
  • تحفہ بھی قبول کرنا چاہیے لیکن اگر کوئی شخص تحائف کے ذریعے غیر شرعی مقاصد حاصل کرنا چاہتا ہو تو ایسے مواقع پر تحائف کو رد کرنا بھی ضروری ہے، مثلا سرکاری اہل کاروں کو جو تحائف دیے جاتے ہیں وہ عموما کام نکلوانے کیلئے ہی دیے جاتے ہیں،ایسے مواقع پر مناسب طریقے سے انہیں ٹھکرا دینا چاہیے۔


 Hadees about Namaz and servants in urdu 

حدیث شریف:
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا آخری کلام یہ تھا:
الصلوۃ الصلوۃ اتقوا اللہ فیماملکت ایمانکم 
ترجمہ:
نماز، نماز اور غلاموں کے بارے میں اللہ سے ڈرتے رہنا۔
(الادب المفرد، امام بخاری)

وضاحت:
رسول اللہ صلی اللہ کی یہ آخری وصیت ہے، اس میں دو باتیں شامل ہیں، ایک نماز پڑھتے رہنا، اسے کسی حال میں نہ چھوڑنا اور اپنے غلاموں سے اچھا سلوک کرنا، پہلے غلام ہوتے تھے آج کل بین الاقوامی معاہدے کی وجہ سے غلام اور لونڈیاں نہیں ہیں لیکن اس کا اطلاق ہر اس شخص پر ہوتا ہے جو ہمارے ماتحت ہے، یعنی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی دوسری وصیت یہ ہے کہ اپنے ماتحتوں کے ساتھ اچھا سلوک کرنا، اس میں ملازمین اور نوکر سب شامل ہیں۔

Hadees about namaz in urdu

Hadees about loaders and Coolies in urdu 

حدیث شریف:
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا:
اعینوھم علی ما غلبوا 
ترجمہ:
مشکل کاموں میں غلاموں اور خادموں کی مدد کرو۔ 
(الادب المفرد، امام بخاری)
وضاحت:
اس حدیث میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اپنے امتیوں کو یہ تعلیم دی ہے کہ تمہارے غلام اور تمہارے خادم جب کوئی مشکل کام کر رہے ہوں تو ان کی مدد کرو۔
 یہ حدیث اتنی اہم ہے کہ میرا جی چاہتا ہے کہ میں اسے ہر ریلوے سٹیشن، ہر بس سٹیشن اور ہر سبزی منڈی میں بڑے بڑے بورڈز پر لکھ کر لگا دوں کیونکہ ان جگہوں پر سراسر اس حدیث کے خلاف کام ہورہا ہے ۔
لوگ جب کسی بندے کو بوجھ اٹھانے کیلئے سو روپے معاوضہ دیتے ہیں تو اسے پانچ سے سات بندوں جتنا بوجھ اٹھوا دیتے ہیں، یہ نہیں خیال کرتے کہ وہ بھی انسان ہے، اس کیلئے بھی جانوروں جتنا بوجھ اٹھانا مشکل ہے، بعض اوقات تو ایسا ہوتا ہے کہ ان بے چارے مزدوروں نے کھانا بھی نہیں کھایا ہوتا اور بیوی بچوں کا پیٹ پالنے کے لیے خالی پیٹ ہی اتنا بوجھ اٹھا رہے ہوتے ہیں، ان میں سے کتنے ایسے ہوتے ہیں جن کی ٹانگوں اور کندھوں میں رات بھر درد ہوتا رہتا ہے لیکن مجبوری میں یہ کام کر رہے تھے، خدارا اس حدیث کو پھیلائیے یہ بہت اہم ہے، اس سے لاکھوں مزدوروں کا بھلا ہوگا اور وہ آپ کو بہت دعائیں دیں گے،انہوں نے دعائیں نہ بھی دیں تو بھی میرا مالک جانتا ہے کہ یہ خیر کا کام کس نے کیا تھا، اس کی تحریک کس نے چلائی تھی۔ 



















کوئی تبصرے نہیں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.